قائم مقام صدر،نگران وزیراعظم سمیت اہم سیاسی شخصیات کی پشاور خودکش حملےکی مذمت

قائم مقام صدرصادق سنجرانی،نگران وزیراعظم ناصرالملک اوروزیرداخلہ محمد عاصم خان نےپشاوردھماکےکی شدیدالفاظ میں مذمت کی اورواقعہ میں جاں بحق ہونےوالوں کےورثاسےتعزیت کااظہارکیا۔مسلم لیگ نون کے صدر میاں شہباز شریف  نےخودکش حملے میں ہارون بلور کی شہادت کو قومی سانحہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم ایک زندہ قوم ہیں اور ایسے واقعات ہمارے عزم اور حوصلہ کو متزلزل نہیں کرسکتے،،واقعہ  سے ہمارا دہشت گردی کے خلاف عزم مزید پختہ ہوا ہے۔ مسلم لیگ کےقائدمیاں نوازشریف نےلندن میں اپنےایک بیان میں خودکش حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گرد جمہوریت کا راستہ روکنے کی مذموم کوشش کر رہے ہیں ،لیکن دہشتگرد کل بھی ناکام ہوئے تھے اور آج بھی ناکام ہوں گے۔ تحریک انصاف کےچیئرمین عمران خان نےاپنےمذمتی بیان میں کہا کہ سیاسی اختلافات کتنے ہی شدید ہوں مگرگردنیں مارنے کی کوئی گنجائش نہیں،انہوں نےمطالبہ کیاکہ واقعے کے ذمہ داروں کو قانون کی گرفت میں لایا جائے۔ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے اے این پی کی کارنر میٹنگ میں دہشتگردی کے واقعے پرکہاکہ ملک دشمن عناصر دہشتگردی سے پاکستان اور جمہوریت کو کمزور کرنا چاہتے ہیں،وطن کو دہشتگردی سے محفوظ کرنا سب کی ذمہ داری ہے، پیپلزپارٹی کےشریک چیئرمین آصف  زرداری  کادہشتگردی کےواقعہ پرافسوس کرتےہوئے کہناتھاکہ پاکستان کے دشمن دہشتگردی کے ذریعے ملک اور جمہوریت پر حملہ آور ہیں۔جمعیت علمائےاسلام کےسربراہ مولانافضل الرحمن،جماعت اسلامی کےامیرسراج الحق چیئرمین پاک سرزمین پارٹی مصطفیٰ کمال اوردیگررہنماؤں  نےبھی واقعہ پرافسوس کااظہارکرتے ہوئےملک دشمن عناصرکوفوری قانون کی گرفت میں لانےکامطالبہ کیا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: