منی لانڈرنگ کیس: ایف آئی اے کا زرداری، فریال تالپور کیخلاف سپریم کورٹ جانے کا فیصلہ

ایف آئی اے کی جانب سے 35 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کیس میں آصف زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کو اسلام آباد ہیڈ کوارٹر طلب کیا گیا تھا جہاں مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کو ان سے پوچھ گچھ کرنا تھی،فریال تالپور ایف آئی اے کی جے آئی ٹی کے سامنے پیش نہ ہوئیں اور اس حوالے سے انہوں نے ایف آئی اے کو خط بھجوادیا،فریال تالپور نے ایف آئی اے کی تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ نجف مرزا کو تبدیل کرنے کا مطالبہ کیا ہے اور نیا سربراہ تعینات کرنے کی بھی درخواست کی ہے۔پیپلزپارٹی کے رہنما اور معروف قانون دان فاروق ایچ نائیک کا کہناہےکہ ایف آئی اے سے مکمل تعاون کو تیار ہیں، فریال تالپور اثاثوں کی تفصیلات جمع کرانےکیلئے لاڑکانہ میں ہیں،جبکہ آصف زرداری کو طلبی کا نوٹس ملنے یا نہ ملنے کا علم نہیں۔دوسری جانب منی لانڈرنگ کیس کے سلسلے میں ایف آئی اے کی تحقیقاتی کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں آصف زرداری اور فریال تالپور کی مسلسل عدم حاضری پر جواب تیار کیا گیا۔ذرائع کا کہنا ہےکہ ایف آئی اے نے اس حوالے سے سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا فیصلہ کایا ہے جب کہ تحقیقاتی ٹیم اپنی رپورٹ سپریم کورٹ میں پیش کرے گی، رپورٹ میں اب تک تحقیقات میں پیشرفت سےمتعلق تفصیلات بیان کی گئی ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: