شمالی یمن میں بس پر فضائی حملہ

سعودی عرب کی سربراہی میں قائم اتحادی فوج کے جنگی طیاروں نے شمالی یمن کے شہر صعدہ میں بمباری کی۔ اس کارروائی کے دوران بچوں سے بھری ایک سکول وین بھی نشانہ بنی جس میں سوار 29 بچےجاں بحق ہوگئے جبکہ فضائی بمباری کے نتیجے میں 21 دیگر افراد بھی جان سے گئے جب کہ 60 سے زائد زخمی ہوئے ۔ دوسری جانب ریڈ کراس نے اپنے ٹوئیٹر ہینڈل پر کہا کہ ان کی جانب سے چلائے جانے والے ایک ہسپتال میں اب تک 29 بچوں کی لاشیں موصول ہوچکی ہیں جن کی عمریں 15 سال سے کم ہیں جبکہ واقعے میں 60 سےزائد افراد زخمی بھی ہوئے جن میں 30 بچے ہیں۔ ادھراتحادی فوج کے ترجمان کرنل ترکی المالکی کا کہناہے کہ طیاروں نے جازان کی طرف داغے گئے حوثی باغیوں کے میزائل حملے کے جواب میں ٹارگٹڈ کارروائی کی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس جوابی اقدام میں حوثی باغیوں کے اس مقام کو نشانہ بنایا گیا جہاں سے میزائل داغا گیا تھا۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ خطے و عالمی سیکیورٹی کے لیے کسی بھی طرح کے اقدامات اٹھانے سے گریز نہیں کیا جائے گا جبکہ اقوام متحدہ نے واقعہ کی شفاف تحقیقات کا مطالبہ کردیا۔جوناتھن ایلن کا کہنا ہے کہ ایسا واقعہ کی تحقیقات بہت ضروری ہیں تاکہ اصل حقائق کا علم ہوسکے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: