ایون فیلڈ ریفرنس: جوڈیشل کمپلیکس کےاطراف دفعہ 144نافذ

احتساب عدالت کی سیکیورٹی میں غیرمعمولی اضافہ کر دیا گیا ہے، جوڈیشل کمپلیکس کے باہر 5 سے زائد افراد کے اکٹھے ہونے پر پابندی ہو گی جبکہ 500 رینجرز اور 1500 پولیس اہلکارسیکیورٹی پر تعینات ہوں گے۔ دوسری جانب رینجرزکی تعیناتی کیلئے بھی درخواست دے دی گئی ہے، احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی سیکیورٹی میں بھی اضافہ کر دیا گیا ہے۔ رینجرز اہلکار جوڈیشل کمپلیکس کے داخلی راستے پر تعینات ہوں گے۔ غیر متعلقہ افراد کا احتساب عدالت میں داخلہ بند ہو گا۔ خیال رہے کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں نواز شریف سمیت ملزمان سے 127سوالات پوچھے گئے، ملزمان کی طرف سے کوئی گواہ عدالت میں پیش نہیں کیا گیا، لندن سے 2 گواہوں کے بیانات ویڈیو لنک پر ریکارڈ کیے گئے جبکہ نیب کے گواہ رابرٹ ریڈلے اور راجا اختر کا ویڈیو لنک    پر بیان ریکارڈکیا گیا۔ ایون فیلڈ ریفرنس کی 107 سماعتیں ہوئیں، نواز شریف اور مریم نواز 78 مرتبہ عدالت میں پیش ہوئے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: