انتخاب 2018 میں سیاسی گہما گہمی اپنے عروج پر

چودھری نثار اور ان کے مدمقابل پی ٹی آئی امیدوار چوھدری غلام سرور خان کے درمیان لفظی جنگ اپنے عروج پر،چودھری غلام سرور نے کہا کہ چودھری نثار نواز شریف کے چہیتے تھے اور ان کا الیکشن مسلم لیگ ن اور اسٹیبلشمنٹ لڑتی تھی، انہوں نے مشکل وقت میں نواز شریف کا ساتھ چھوڑ دیا، جس حلقے کی وہ نمائندگی کر رہے ہیں وہاں کالج میں نے بنوایا، عمران خان چاہتے تھے کہ چودھری نثار پارٹی میں شامل ہوں لیکن میں نے کہا کہ یہ شخص کسی کا بھی نہیں ہے یہ بیٹھا کسی اور کے ساتھ ہوتا ہے اور کام کسی اور کیلئے کرتا ہے،چودھری نثار نے اس بیان کا رد عمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ سرور خان کی وجہ شہرت پارٹیاں بدلنا اور بے مقصد بیان بازی کرنا ہے، تحریکِ انصاف میں شمولیت کی بات اپنی خفت مٹانے کی کوشش ہے، تحریک انصاف کی قیادت انہیں کھلے عام پارٹی میں شمولیت کی دعوت دے چکی ہے اس کے بعد کسی شخص کو عمران خان کے پاس بھجوانے کا کیا جواز باقی رہ جاتا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: