کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے اصل ذمہ دار امریکا اور اسرائیل ہیں، جواد ظریف

محمد جواد ظریف نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ علاقے میں ایک بار پھر عراق و شام میں داعش دہشتگرد گروہ کو تسلط پسند طاقتوں کی جانب سے فراہم کئے جانے والے کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال ہوا اور اس کی مکمل ذمہ داری امریکا و اسرائیل پر عائد ہوتی ہے۔انہوں نے کہا کہ کیمیائی ہتھیاروں پر پابندی کے معاہدے میں شامل ہونے کی حیثیت سے ایران معاہدے کے دیگر ملکوں کے ہمراہ امریکا سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ کنونشنز کی پابندی کرے اور بین الاقوامی تنظمیوں کی نگرانی میں اپنے کمیائی ہتھیاروں کوتلف کرے۔ مشرق وسطیٰ کو مہلک ہتھیاروں سے پاک کرنے کی راہ میں رکاوٹ پیدا کرکے اس حساس علاقے میں خطرناک ہتھیاروں کا سلسلہ جاری رہنے کے ذمہ دار امریکا اور اسرائیل ہی ہیں اور عالمی برادری کو اس سلسلے میں ان دونوں کا مواخذہ کرنا اور ان کی مذمت کرنی چاہئے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: