سپریم کورٹ کی جہلم سے نون لیگی امیدواربلال کیانی کوالیکشن لڑنے کی اجازت

چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے بلال اظہر کیانی کی دوہری شہریت پر نااہلی سے متعلق ٹربیونل کے فیصلے کیخلاف درخواست پر سماعت کی۔ درخواست گزار نے موقف اپنایا کہ 7 جون کو دوہری شہریت ترک کر کے 4 دن پہلے ڈیکلیریشن بھیج دیاتھا، کاغذات نامزدگی میں واضح کر دیا تھا کہ دوہری شہریت ترک کر دی ہے، اس کے باوجود ٹربیونل نے کاغذات مسترد کئے.جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیئے کہ صرف شہریت چھوڑنے کا کہہ دینا کافی نہیں ہوتا،چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ دیکھنا ہےکیا کاغذات جمع کروانے سے پہلے دوہری شہریت چھوڑ دی تھی، عدالت نے انتخاب لڑنے کی اجازت دیتےہوئے قرار دیا کہ کامیابی کا نوٹیفکیشن سپریم کورٹ کے فیصلے سے مشروط ہوگا۔ادھربلوچستان ہائیکورٹ نے آر او کا فیصلہ برقرار رکھتے ہوئے پیپلز پارٹی کےصوبائی صدراورانتخابی امیدوار علی مدد جتک کو انتخابات کیلئے نااہل قرار دے دیا جبکہ نواب میر عالی بگٹی کو انتخابات میں حصہ لینے کی اجازت مل گئی ہے۔آراوکےفیصلےکیخلاف جسٹس نعیم اختر افغان اور جسٹس نذ یر لانگو پر مشتمل بنچ نے فیصلہ سنایا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: