ڈنمارک: نقاب پہننے پر مسلم خاتون کو پہلا جرمانہ

ڈنمارک : ڈنمارک کی پارلیمنٹ نے چند ماہ قبل عوامی مقامات پر مسلمان خواتین کے پورے چہرے کے نقاب پرپابندی کا قانون منظور کیا تھا جس پر یکم اگست سےاطلاق ہوگیاہے۔ قانون کے مطابق پولیس اہلکار عوامی مقامات پر نقاب لگانے والی خواتین کو نقاب ہٹانے یا انہیں وہاں سے گھر جانے کے لئے کہیں گے۔ پولیس والے کی بات نہ ماننے پر خواتین کو جرمانہ کیا جائےگا۔ اس قانون کی پہلی بارخلاف ورزی پر ایک ہزار ڈینش کراؤن یعنی 120پاؤنڈ جرمانہ ہوگا جبکہ تین سے زائد بار خلاف ورزی کرنے پرجرمانہ 10ہزار ڈینش کراؤن تک کیا جاسکےگا۔ نقاب پر پابندی کےخلاف ڈنمارک کے مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے بھی کئے گئے۔ مسلمان خواتین کا کہنا ہے کہ وہ نقاب نہیں اتاریں گی اور اپنے حق کے لئے لڑیں گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: