الیکشن 2018 میں خواتین کی ریکارڈ تعداد بھی میدان میں

الیکشن کمیشن نے عام انتخابات 2018 میں خواتین کو جنرل نشستوں پر ٹکٹ جاری کرنےوالی جماعتوں کی تفصیلات جاری کردیں۔ جس کے مطابق 107رجسٹرڈ سیاسی جماعتوں میں سے48جماعتوں نے مجموعی طور پر304 خواتین کو جنرل نشستوں پر ٹکٹ دیئے جبکہ 59 جماعتوں نےکسی خاتون امیدوار کوپارٹی ٹکٹ جاری نہیں کیا۔ الیکشن کمیشن کے مطابق پاکستان پیپلزپارٹی نے سب سےزیادہ 43خواتین کوجنرل نشستوں پر ٹکٹ جاری کئے۔ پاکستان تحریک انصاف نے کل 769 جنرل نشستوں پر امیدواروں کو ٹکٹ دیئے، جن میں 42 خواتین شامل ہیں۔ مسلم لیگ (ن) نے 37 جنرل نشستوں پر خواتین کو ٹکٹ جاری کئے۔ متحدہ مجلس عمل نے 33جنرل نشستوں پر خواتین کو ٹکٹ جاری کئے۔ تحریک لبیک پاکستان نے 35، پاک سر زمین پارٹی نے 12، ایم کیو ایم پاکستان نے 6، آل پاکستان مسلم لیگ نے 8، پختونخوا ملی عوامی پارٹی نے 18، عوامی نیشنل پارٹی نے 14، گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس (جی ڈی اے) سندھ نے 8، نیشنل پارٹی نے 7، مسلم لیگ (ق) نے 5، بلوچستان نیشنل پارٹی (بی این پی) نے 3 اور بی این پی عوامی نے 2 جنرل نشستوں پر خواتین کو ٹکٹ دیئے۔ الیکشن کمیشن کے مطابق چار سیاسی جماعتوں نے 5 فیصد خواتین کوجنرل نشستوں پرٹکٹ جاری کرنےکےقانون کی خلاف ورزی کی، جن میں اللہ اکبرتحریک، جمعیت علمائے اسلام (س)، پی ٹی آئی (نظریاتی) اور پاسبان پاکستان شامل ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: