عمران خان کا بڑا فیصلہ۔۔۔وزیر اعظم کا حلف اٹھاتے وقت شیروانی کی جگہ کیا پہنیں گے؟جان کر آپ بھی کپتان کے اس شاندار فیصلے کو سراہیں گے

اسلام آباد(سی پی پی ) عمران خان کا اپنی تقریب حلف برداری میں شیروانی زیب تن نہ کرنے کا فیصلہ، تحریک انصاف کے سربراہ ممکنہ طور پر 14 اگست کو شلوار قمیض زیب تن کرکے وزارت عظمیٰ کا حلف اٹھائیں گے۔ تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف نے پاکستان میں 25 جولائی کو ہونے والے عام انتخابات میں تاریخی کامیابی حاصل کی۔ تحریک انصاف نے ملک بھر سے کل 116 نشستوں پر فتح حاصل کی اور حکومت بنانے کی پوزیشن میں آگئے۔ جبکہ تحریک انصاف نے انتخابات کے سرکاری نتائج کے آنے کے بعد سے جوڑ توڑ کے ذریعے حکومت بنانے کیلئےمطلوبہ نمبرز بھی حاصل کر لیے ہیں۔ تحریک انصاف آزاد امیدواروں، مسلم لیگ ق، بی اے پی، ایم کیو ایم اور دیگر کیساتھ مل کر وفاق میں حکومت قائم کرے گی۔اس حوالے سے نگران حکومت نے بتایا ہے کہ نومنتخب اراکین اسمبلی کے حلف کیلئے قومی اسمبلی کا اجلاس 11 یا 12 اگست کو طلب کیا جائے گا۔نگران حکومت کے مطابق نومنتخب اراکین اسمبلی 11 یا 12 اگست کے اجلاس میں حلف اٹھا لیں گے۔ جبکہ اسی روز قومی اسمبلی کے اسپیکر، ڈپٹی اسپیکر اور وزیراعظم کا انتخاب بھی کر لیا جائے گا۔ نگران حکومت کا مزید بتانا ہے کہ ممکنہ طور پر قومی اسمبلی کے اجلاس والے روز ہی وزیراعظم ایوان صدر جا کر وزارت عظمیٰ کا حلف اٹھا لیں گے، اس حوالے سے ممکنہ وزیراعظم عمران خان سے متعلق تحریک انصاف کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ میں بتایا گیا ہے کہ وزیراعظم کی حلف برداری کی تقریب سادگی کیساتھ منعقد کی جائے گی۔ جبکہ عمران خان مہنگی شیروانی کی بجائے شلوار قمیض کا لباس زیب تن کرکے وزارت عظمیٰ کا حلف اٹھائیں گے۔ جبکہ عمران خان ممکنہ طور شلوار قمیض کے لباس میں ہی قومی اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کریں گے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: