”بھارتی فوج سب سے بڑی دہشتگرد،مودی حکومت نے ظلم وبربریت کی تمام حدیں پارکردیں”

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کا سلسلہ جاری ہے اور قابض حکومت نہتے کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کو کچلنے کےلیے کیمیائی ہتھیاروں سمیت ہر طرح کا اسلحہ استعمال کررہی ہے۔ بھارتی فوج پرامن کشمیریوں کو احتجاجی مظاہروں سے روکنے کے لیے ان پر سیدھی فائرنگ کرتی ہے جب کہ بھارتی مظالم کے خلاف کشمیریوں کا ہتھیار محض پتھر ہوتے ہیں۔ اب بھارتی حکومت بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ نے ہرزہ سرائی کرتے ہوئے کہا ہے کہ پتھراؤ کرنے والے کشمیریوں کو گولی مار دینی چاہیے۔بی جے پی کے رکن اسمبلی اور بھارتی فوج کے سابق لیفیٹننٹ جنرل ’ڈی پی واتس‘ نے کہا کہ میں نے سنا ہے کہ پتھراؤ کرنے والے کشمیریوں کے خلاف مقدمات واپس لیے جارہے ہیں لیکن ان لوگوں کو تو گولی مار دینی چاہیے۔واضع رہے کہ مقبوضہ کشمیر میں محبوبہ مفتی کی حکومت نے 10 ہزار لوگوں کے خلاف مقدمات ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے جن کے خلاف بھارتی فورسز پر پتھراؤ کا الزام عائد ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: