حجاج کرام کے لئے ضابطہ اخلاق جاری

پاکستان علماء کونسل کے مرکزی چیئرمین طاہر محمود اشرفی کے ہمراہ دیگر مفتیان اور علماء نے ضابطہ اخلاق کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ حجاج کرام اور زائرین حج کے دوران کسی بھی قسم کی سیاسی سرگرمیوں میں شریک نہ ہوں ، سعودی عرب کے قوانین کی مکمل پابندی کریں اور معلم اور رہبر کی ہدایات پر عمل کریں ، ضابطہ اخلاق میں حجاج کرام اور زائرین کو بتایا گیا ہے کہ حرم شریف میں رش کے زیادہ ہونے کی وجہ سے عورتوں اور ضعیف مردوں کا اپنی رہائش گاہ یا اس کے قریب نماز ادا کر لینا بھی حرم شریف کی حدود میں نماز کے ثواب کے برابر ہو گا۔ ضابطہ اخلاق میں نوجوانوں سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ اپنے گروپوں میں شریک بیماروں ، کمزوروں اور ضعیفوں کا خصوصی خیال رکھیں۔ حجاج کرام کسی بھی قسم کی دوائی بغیر ڈاکٹر کے نسخے کے مت ساتھ لےجائیں۔ منیٰ ، عرفات اور مزدلفہ کے سفر کے دوران معلم اور رہبر کے ضابطے کے مطابق عمل کرنے اور رمی جمرات کیلئے بھی حکومت سعودی عرب کی ہدایات اور معلم اور رہبر کے ضابطہ کے مطابق عمل کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ کسی بھی مشکل یا شکایت کی صورت میں وزارت مذہبی امور پاکستان اور وزارت حج سعودی عرب کی طرف سے قائم شکایت سیل سے رجوع کریں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: