پیار کی کشتی میں ،،لہروں کی مستی

 

پیار کی کشتی میں ،،لہروں کی مستی میں،اور ہم نکل پڑے بارش کے پانی میں،لاہور میں بارش کے پانی میں ریسکیو اہلکار کشتی لیکر نکل پڑے،جبکہ قذافی اسٹیڈیم اور ہاکی گراؤنڈ میں بھی پانی بھر گیا

موسلا دھار بارش سے لاہور دریا بن گیا،چند گھنٹوں کی بارش نے انتظامیہ کی کارکردگی پر سوال اٹھا دیا،جگہ جگہ پانی سے ٹریفک کا نظام درہم برہم ہو گیا،سڑکوں پر کشتیاں چلنے لگیں،ریسکیو1122 کشتیاں لیکر میدان میں آگئے،اور پانی میں پھنسے لوگوں کو انکی منزل تک پہنچایا،جبکہ طالبعلموں نے بھی پرچہ دینے کے لیے جانے کے لیے کشتی کا استعمال کیا

 

 

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: