فیاض الحسن کو کیوں ہٹایا گیا،اب انکی جگہ کون وزیر اطلاعات پنجاب کی ذمہ داریاں کون سنبھالے گا؟بڑا فیصلہ سامنے آگیا

اسلام آباد:  وزیر اعظم عمران خان کے حکم پر فیاض الحسن چوہان کو پنجاب حکومت کی ترجمانی سے روک دیا گیا،ان کی جگہ اب شہباز گل پنجاب حکومت کے ترجمان ہوں گے۔تفصیلات کے مطابق  فیاض الحسن چوہان پنجاب کی صوبائی کابینہ کے انتہائی متنازعہ وزیر بن کر سامنے آئے ہیں۔اپنے غیر ذمہ دارانہ بیانات کے باعث حکومتی خبریں دینے والے وزیر موصوف خود ہی خبروں کی زینت بننے لگے ہیں۔ انہوں نے تھیٹر کی سابقہ اداکارہ نرگس کے حوالے سے انتہائی متنازعہ بیان دے کر تمام توپوں کے رخ اپنی جانب کروا لئیے۔انہوں نے کہا کہ تھیٹر میرے انڈر

ہوتا تو پھر میں نرگس کو حاجی نرگس نہ بناتا تو پھر آپ کہتے۔اور اداکارہ میگھا سال کے 30 نہیں بلکہ 300روزے نہ رکھتی تو پھر آپ کہتے۔ اس بیان پر اداکارہ نرگس اور میگھا کا رد عمل سامنے آیا تو معافی مانگ لی۔ پھر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے بھی فیاض الحسن چوہان احتیاط نہیں کرتے تھے ،جس کے باعث تحریک انصاف کی صوبائی حکومت مشکلات کا شکار ہورہی تھی۔تاہم تازہ ترین خبر کے مطابق وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان کو پنجاب حکومت کی ترجمانی سے روک دیا گیا ہے۔وزیر اعظم عمران خان کے حکم پر جاری کئیے جانے والے نوٹیفیکیشن میں کہا گیا ہے کہ فیاض الحسن چوہان اب پنجاب حکومت کی مزید ترجمانی نہیں کر سکیں بلکہ انکی جگہ شہباز گل کو پنجاب حکومت کا ترجمان مقرر کیا گیا ہے۔ 

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: