نوازشریف،مریم نواز کو گرفتاری کی صورت میں اڈیالہ یا کوٹ لکھپت جیل میں رکھنے کا امکان

احتساب عدالت کی جانب سے سزا سنائے جانے کےبعد نیب نے نوازشریف اور مریم نواز کو فوری گرفتار کرنے کا فیصلہ کیا ہےاور انہیں ائیرپورٹ پر ہی گرفتار کیا جائے گا۔جیل ذرائع کےمطابق نوازشریف اور مریم نواز کی گرفتاری کی صورت میں 2 جیلوں میں انتطامات مکمل کرلیے گئے ہیں، انہیں سینٹرل جیل کوٹ لکھپت لاہور یا اڈیالہ جیل راولپنڈی میں رکھا جاسکتا ہے۔ذرائع کا کہنا ہےکہ نوازشریف اور مریم نواز کو جس جیل میں رکھا جائے گا اس کو سب جیل قرار دیا جاسکتا ہے، ماضی میں سابق وزیراعظم بے نظیر بھٹو کو سہالا کے قریب ایک ریسٹ ہاؤس میں رکھا جاچکا ہے جب کہ جنرل یحییٰ خان کو جہلم میں ایک ریسٹ ہاؤس میں رکھا گیا تھا۔بی کلاس کے تحت مجرم جیل یونیفارم کی بجائے عام کپڑے پہن سکتاہے، مجرم کو گھر کا کھانا دیا جاسکتا ہے یا کھانا پکانے کی اجازت بھی ہوتی ہے جب کہ مجرم کو ٹی وی، ائیر کنڈیشن اور اخبار کے لیے سیکریٹری داخلہ کی اجازت درکار ہوگی۔ذرائع کے مطابق کسی مجرم کوتب سب جیل میں رکھاجاتا ہے جب اس کی جان کوخطرہ ہو، کسی مجرم کو اگر سب جیل میں رکھا جائے تو اس کو بی کلاس کہا جاتا ہے، جیل رولز 245 کے تحت بی کلاس میں سابق وزیراعظم کی خدمت کے لیے 2 قیدی دیئے جاتے ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: