شمالی کوریانے امریکی وزیر خارجہ کے ساتھ مذاکرات کو قابل افسوس قراردے دیا

کورین مذاکرات کار کم یونگ چول کا کہناہے کہ ایٹمی پروگرام ختم کرنے کیلئے امریکا کا مطالبہ یکطرفہ اور مائیک پومپیو کا رویہ گیگسٹر جیسا تھا۔ مائیک پومپیو کا کہناہے کہ پیانگ یانگ سے بات چیت میں پیش رفت ہوئی ہے۔امریکی اخبار نیویارک ٹائمز کے مطابق امریکی وزیر خارجہ دو روز سے پیانگ یانگ میں موجود تھے۔ انہوں نے دوبارہ ایٹمی سرگرمیاں شروع کرنے پر کورین حکام سے مذاکرات کئے۔ پومپیو شمالی کورین لیڈر کم جونگ ان سے تو نہ مل سکے لیکن انہوں نے کورین مذاکرات کار کم یونگ چول اور ان کی ٹیم سے ملاقات کی۔ کم یونگ چول نے بیان میں کہاکہ امریکی وزیر خارجہ کا رویہ قابل افوس اور گینگسٹر جیسا تھا۔ یکطرفہ طور پر ایٹمی پروگرام بند کرنے کیلئے امریکی دباؤ نامناسب ہے۔ تمام صورتحال کے باجود شمالی کورین لیڈر کم جونگ ان سنگاپور میں ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات کی روشنی میں امریکا سے تعلقات جاری رکھنا چاہتے ہیں جبکہ دو روز کے مذاکرات کے بعد واپسی پر مائیک پومپیو نے کوریا رہنماؤں کے رویئے کو ملا جلا قرار دیا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: