ٹیکس ایمنسٹی سکیم کا آج آخری روز،قومی خزانے میں 80 ارب روپے جمع

ٹیکس ایمنسٹی سکیم :ن لیگ کی سابق حکمراں جماعت کی جانب سے متعارف ٹیکس ایمنسٹی سکیم کا آج آخری روز ہے۔ گزشتہ روز تک 5 ہزار شہریوں نے اپنے بیرون ملک اثاثوں کی تفصیلات جمع کرائیں۔ ذرائع کے مطابق موصول ہونے والی کل رقم کا اندازہ ٹھیک سے نہیں لگایا جاسکتا کیوں کہ متعدد گوشوارے تاحال تصدیق کے عمل سے گزر رہے ہیں جبکہ اسی ارب روپے حکومتی اکاؤنٹ میں جمع ہو چکے ہیں۔ ایف بی آر میں موجود متعدد اہم ذرائع نے انکشاف کیا تھا کہ اکیس جون تک سکیم کے تحت ٹیکس کی مد میں اکیس ارب روپے جمع کیے جا چکے ہیں۔ اس حوالے سے بتایا گیا کہ بینکوں میں تقریباً پانچ ارب روپے جبکہ ایف بی آر کے آن لائن سسٹم میں سولہ ارب روپے کے چالان جمع کرائے گئے تھے۔ ٹیکس ایمنسٹی سکیم کی مدت تیس جون رکھی گئی جس میں توسیع کے امکانات کو مسترد کردیا گیا لیکن نگراں حکومت پر سکیم کی مدت میں اضافے کا شدید دباؤہے۔ اس حوالے سے بتایا گیا کہ کراچی اور پشاور سے سب سے زیادہ بیرون ملک اثاثے ظاہر کیے گئے، کراچی کے ایک شہری نے بیرون ملک اثاثوں کی مد میں تین ارب بیس کروڑ روپے جبکہ پشاور کی ایک خاتون نے ایک ارب بیس کروڑ روپے ادا کیے۔ کراچی سے تعلق رکھنے والے صنعت کار نے بیرون ملک اثاثوں کو ظاہر کرتے ہوئے چھبیس کروڑ ستر لاکھ روپے قومی خزانے میں جمع کرائے۔ سکیم سے فائدہ اٹھانے والوں کی بڑی تعداد تاحال موجود ہے اور ایف بی آر اور محکمہ خزانہ کو سکیم کی مد میں تقریباً سو ارب روپے سرکاری خزانے میں جمع کیے جانے کا امکان ہے۔ ایف بی آر نے بینکوں سے معاہدہ کیا تھا کہ وہ ناصرف اپنی شاخیں ہفتہ اور اتوار کو بھی کھولیں بلکہ ایمنسٹی سکیم سے فائدہ اٹھانے والوں کے چالان بینک کے اوقات کے بعد بھی وصول کریں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: