ہرمسئلے میں ٹانگ اڑانے والا عالمی چودھری شدید پریشان

دنیا کا کوئی بھی کونا ہو اورکسی بھی ملک کو کوئی بھی مسئلہ ہو، خود کوچودھری سمجھنےوالاامریکا بہادراپنی چودھراہٹ دکھانےوہاں آ دھمکتا ہے لیکن اس بار ایسا کیا ہوا کہ مسئلے کو دیکھ کرانکل سام نے ہاتھ اٹھالئے ۔ یہ مسئلہ ہے مفادات کا،جی ہاں مفادات کا۔۔۔حالیہ کچھ روز سے ملک کینیڈا اور مسلم ریاست سعودی عرب کے درمیان تناؤ کی کیفیت ہے اور دونوں ممالک کے سفارتی تعلقات منقطع ہوچکے ہیں لیکن اس صورتحال میں امریکا کوئی کردار ادا کرنے سے ہے گریزاں۔ اس کی آخر کیا وجہ ہے؟کینیڈا امریکا کا ہمسایہ ملک ہے جبکہ مسلم ریاست سعودی عرب سے واشنگٹن کے مختلف قسم کے مفادات وابستہ ہیں اور یہی وہ وجہ ہے جس نے انکل سام کو ہاتھ کھڑے کرنے پر مجبور کردیا۔اس حوالے سے امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان ہیدر نوئرٹ کا واشنگٹن میں بریفنگ کے دوران کہنا تھا کہ سعودی عرب اور کینیڈا دنوں امریکا کے قریبی دوست اور شراکت دار ہیں لیکن حال ہی میں شروع ہونے والے تنازعات دنوں کو خود ہی حل کرنا ہوں گے۔ امریکا ان کے تنازعات حل نہیں کرسکتا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: