سرحد پرباڑ افغان جنگ سے سستی،اخراجات امریکہ اٹھائے،خواجہ آصف

امریکہ: غیرملکی میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ پاک افغان سرحد پر باڑ امریکا کو زیادہ مہنگی نہیں پڑے گی جبکہ افغان جنگ امریکا کو زیادہ مہنگی پڑ رہی ہے۔ سرحد کو محفوظ بنانے کے حوالے سے خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ باڑ سے دہشت گردوں کی پاکستان میں آمد کا سلسلہ رک جائے گا۔ وزیر خارجہ نے 20 لاکھ افغان پناہ گزینوں کی واپسی کے عمل کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ پناہ گزین کیمپ دہشت گردوں کی افزائش کی جگہ بن رہے ہیں اور یہ فیصلہ خطے میں امن کی بحالی کے لیے انتہائی اہم ہے. خواجہ آصف نے دعویٰ کیا کہ روزانہ تقریباً 7 لاکھ کے قریب افراد بغیر اطلاع کے سرحد پار کرتے ہیں جو دونوں ممالک کے لیے ایک بڑا خطرہ ہیں۔ یاد رہے کہ پاکستان کی جانب سے سرحد پر باڑ لگانے کے عمل پر کابل حکومت نے شدید تحفظات کا اظہار کیا تھا کیونکہ افغانستان ڈیورنڈ لائن کو بین الاقوامی سرحد کے طور پر ماننے کو تیار نہیں ہے۔

 

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: