مسلح افواج کی قربانیوں سے پاکستان میں امن ممکن ہو سکا، وزیراعظم

   وزیراعظم: وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ایس ایس سی ہیڈ کوارٹرز چیراٹ کا دورہ کیا۔ اس موقع پر وزیر دفاع خرم دستگیر بھی وزیراعظم کے ہمراہ تھے۔وزیراعظم نے ایس ایس جی ہیڈکوارٹرزمیں یادگار شہداء پر حاضری دی اور پھولوں کی چادر چڑھائی۔ اس موقع پر وزیراعظم کو ایس ایس جی کی تنظیم سازی، صلاحیتوں اور پرفارمنس پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔وزیراعظم نے دہشت گردی کے خلاف ایس ایس جی کمانڈوز کی شاندار خدمات کو سراہا اور ایس ایس جی کمانڈوز کی بطور ایلیٹ فورس مہارت اور کارکردگی کی تعریف کی۔ ایس ایس جی کمانڈوز نے وزیراعظم اور آرمی چیف کو اپنی مہارت کا عملی مظاہرہ بھی کر کے دکھایا۔ وزیراعظم نے ایس ایس جی کے زیر استعمال کچھ ہتھیار چلانے کا تجربہ بھی کیا۔وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ایس ایس جی سب سے زیادہ قربانیاں دیتی ہے اور مشکل کی ہر گھڑی میں ایس ایس جی سب سے پہلے پہنچتی ہے۔انہوں نے کہا کہ ایس ایس جی کی قربانیاں وہ ہیں جو منظر عام پر نہیں آتیں، کارگل سے لیکرسوات تک پاک فوج کی محنت رنگ لائی ہے جبکہ آپریشن ضرب عضب میں ایس ایس جی کی محنت نظر آتی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ دنیا ہماری ایس ایس جی کی تعریف کرتی ہے، مجھے 4 ممالک کے سربراہان نے کہا آپ کی اسپیشل فورس کا کوئی ثانی نہیں ہے

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: