چار سالہ اسماء قتل کیس 25 روز میں حل کرلیا،آئی جی خیبر پختونخواہ گرفتار ملزم نے اعتراف جرم کر لیا ہے،

پشاور: پشاور میں میڈیا کو بریفنگ کے دوران آئی جی خیبرپختونخوا نے بتایا کہ مردان میں قتل ہونے والی 4 سالہ بچی اسما کے والدین نے پولیس پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا اور اسما جیسے کیسز میں پولیس کو معاشرے کے تعاون کی ضرورت ہوتی ہے۔ صلاح الدین محسود نے کہا کہ اسما کے کیس میں گوجر گڑھی کے عمائدین پر مشتمل کمیٹی بھی بنائی تاکہ شفاف تحقیقات کی جاسکے۔اس حوالے سے آر پی مردان کا کہنا تھا کہ اسماءقتل کیس میں ہم نے 2ملزمان کو گرفتار کیا جنہوں نے اعتراف جرم کرلیا ہے۔ گزشتہ روز ڈی این اے کے 2سیمپل میچ ہونے کی رپورٹ ہمیں دی گئی، آر پی او مردان کا کہنا تھا کہ بچی اسماء کی گردن پر انگلیوں کے نشان تھے،ملزم نے بچی کا گلا دبایا جس سے اس کا دم گھٹ گیا اور وہ فوت ہو گئی ، آر پی او کے مطابق ملزم 15سال کا لڑکا ہے جو ریسٹورنٹ میں کام کرتا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: