عائشہ گلالئی نااہلی کیس،انٹرا کورٹ اپیل پر فیصلہ محفوظ

اسلام آباد ہائی کورٹ میں عائشہ گلالئی کی نا اہلی کے لئے انٹراکورٹ اپیل پر کیس کی سماعت ہوئی، جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب پر مشتمل ڈویژن بینچ نے انٹرا کورٹ اپیل پر سماعت کی ۔ درخواست گزار کے وکیل ایڈووکیٹ کلثوم خالق نے عدالت کو بتایا کہ عائشہ گلالئی نے چیئرمین پی ٹی آئی پرغلط الزام لگائےجو ثابت نہیں ہو سکے، بغیر ثبوت عمران خان پرغیر مناسب الزام لگانا عائشہ گلالئی کی نا اہلی کے لئے کافی ہیں ،کلثوم خالق نےعدالت میں دلائل دیتے ہوئے کہا کہ ہمارا مذہب ہمیں فحش چیزوں کی اجازت نہیں دیتا، انہوں نےعدالت کو بتایا کہ عائشہ گلالئی کی نااہلی کے خلاف الیکشن کمیشن میں بھی درخواست دی لیکن کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔ اس موقع پر انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ وہ الیکشن کمیشن کو عائشہ گلالئی کی نا اہلی کا نوٹیفیکیشن جاری کرنے کی ہدایت کریں،عدالت نے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا۔ واضح رہےکہ اس درخواست میں الیکشن کمیشن آف پاکستان، اسپیکرقومی اسمبلی اورعائشہ گلالئی کو فریق بنایا گیا ہے۔ اسلام آباد ہائیکورٹ پہلے ہی پی ٹی آئی کی منحرف رکن قومی اسمبلی عائشہ گلالئی کی نااہلی کی درخواست کو نا قابل سماعت قرار دیتے ہوئے خارج کرچکا ہے ۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.