کابینہ اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی

کابینہ اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی،چودھری نثار نے وزیر اعظم سے کہا سیاسی ولیگل ٹیم نے معاملات کو صحیح طرح ہینڈل نہیں کیا،وزیر اعظم بولے بہتر ہوتا آپ مجھ سے علیحدگی میں بات کرلیتے

وزیراعظم نوازشریف کی زیر صدارت ہونے والے کابینہ اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی ہے ،اجلاس کے دوران وزیر داخلہ نے نوازشریف سے خوب گلے شکوے کئے  اور کہا کہ سیاسی اورلیگل ٹیم نے معاملات کوصحیح طرح ہینڈل نہیں کیا، خوشامدی مشیروں نے صورتحال کو آج اس مقام پرپہنچایاہے، 1985سے آپ کےساتھ ہرموقع پر کھڑارہاہوں ،پارٹی کےساتھ وفاداری نبھائی ہے ، ایک بار آپ سے وزیرخارجہ بنانے کی خواہش کی،اس کے بعد کبھی آپ سے کچھ نہیں مانگا۔ چوہدری نثار کا کہناتھا کہ مشاورت کاعمل بھی محدود کر دیاگیا،جونیئر لوگوں کوآگے لایاگیا، مجھ سے کوئی مشاور ت نہیں کی گئی ۔انہو ں نے کہا کہ پاناما کیس کے  دوران جو تقریر یں کیں گئیں ، وہ نہیں ہونی چاہییں تھیں،اداروں کیساتھ تصادم نہیں ہونا چاہیے،کوئی بہترراستہ نکالناچاہیے ، جوہورہاہے اور جوکچھ ہونے جارہاہے،کوئی معجزہ ہی آپ کو بچا سکتاہے۔اس پر وزیراعظم نے چوہدری نثار کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ کو کوئی تحفظات تھے تو بہتر ہوتا مجھ سے علیحدگی میں بات کرلیتے، یہاں بات کرنے کی بجائے الگ سے بات کرنا مناسب ہوتا۔چوہدری نثار نے کہا کہ مسٹر پرائم منسٹر،جو بات کرتاہوں منہ پر کرتاہوں ، کبھی خوشامد نہیں کی، ہمیشہ حقائق پر بات کی ۔وزیر داخلہ چوہدری نثار نے کہا کہ آپ کیلئے موجودہ صورتحال میں دعاگو ہوں ،اس کے بعد وزیر داخلہ اٹھے اور اجلاس ختم ہونے سے قبل ہی چلے گئے ۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.