زینب قتل واقعے پر قوم کا سر شرم سے جھک گیا،چیف جسٹس پاکستان

 میاں ثاقب نثار: سپریم کورٹ میں الرازی میڈیکل کالج کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے قصور میں مبینہ زیادتی کے بعد قتل کی گئی 7 سالہ زینب سے متعلق بھی ریمارکس دیئے۔چیف جسٹس نے کہا کہ زینب قوم کی بیٹی تھی اور اس کے قتل سے پوری قوم کا سرشرم سے جھک گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس واقعے سے مجھ سے زیادہ میری اہلیہ گھر میں پریشان ہوئیں۔سماعت کے دوران وکیل اعتزاز احسن نے عدالت کو بتایا کہ سانحہ قصور سے متعلق ہڑتال کی جارہی ہے جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ دکھ اور سوگ اپنی جگہ لیکن ہڑتال کی گنجائش نہیں بنتی۔اس موقع پر وکیل اعتزازاحسن نے کہا کہ ہڑتال احتجاج کرنے والوں پر کی جانے والی فائرنگ کے خلاف ہے۔ دوران سماعت چیف جسٹس نے کہا کہ صحت اورعدلیہ جیسے شعبوں میں اپنا اپنا کردار ادا کرنا ہوگا ۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: