چین کی کراچی میں اپنےشہری کےقتل کی شدیدمذمت

کراچی: چین نے کراچی میں اپنے شہری کے قتل کی شدید مذمت کرتے ہوئے ملزموں کو فوری انصاف کے کٹہرے میں لانے کامطالبہ کیا ہے۔بیجنگ میں چینی وزارت خا رجہ کے ترجمان جینگ شوانگ نے پریس بریفنگ کے دوران کہاکہ ہم چینی شہریوں کیخلاف انتہا پسندانہ اورپرتشددکارروائی کی سخت مذمت کرتے ہیں،جتنا جلد ممکن ہو معاملے کو حل اور ملزموں کو کٹہرے میں لایا جائے، کیس پرہونیوالی پیشرفت پرنظررکھیں گے۔ترجمان کا کہنا تھا کہ پاکستانی حکومت اورفوج نے انسداد دہشتگردی اور سوشل سکیورٹی کیلئے کئی اقدامات کیے ہیں،ہم قومی سلامتی کے تحفظ سے متعلق پاکستان کے اقدامات کی حمایت کرتے ہیں اور امیدکرتے ہیں وہ ملک میں چینی اداروں اور عملے کے تحفظ کے لیے انتظامات جاری رکھے گا۔دوسری جانب محکمہ داخلہ سندھ میں اہم اجلاس ہوا جس میں چینی قونصل جنرل، سیکرٹری داخلہ، ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی ثنا اللہ عباسی ودیگرنے شرکت کی۔ اجلاس میں چینی قونصل جنرل کو تفتیش میں اب تک ہونے والی پیشرفت سے آگاہ کیاگیا۔ادھرقتل کی واردات کےدوران بچ جانیوالادوسری چینی باشندہ لی فین انتہائی خوفزدہ ہے،،جس وجہ سےاس  نے بیان ریکارڈنہیں کروایا،، لی فین  نے کہا ہے کہ وہ ابھی بہت خوفزدہ ہے،لہذا فوری نہیں آسکتا۔سی ٹی ڈی ذرائع کا کہنا ہے کہ جیوفینسنگ کے دوران 10 ہزار کالز کا ڈیٹا مرتب کیا جا رہا ہے جبکہ مقتول کی کار بھی تحویل میں لے لی ہے، پولیس ذرائع کے مطابق مقتول اور اس کے دوست کا موبائل ڈیٹا بھی حاصل کرلیاگیا

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: