نقیب کے بعد اب جنید،انکاؤنٹر سپیشلسٹ’ راؤ انوار کا ایک اور جعلی پولیس مقابلہ،تحقیقات شروع،

کراچی: مبینہ پولیس مقابلے میں مارے جانے والے جنید ابڑو کے اہل خانہ نے الزام لگایا کہ جنید کو گذشتہ برس 25 دسمبر کو نیو کراچی سے پکڑا اور اگلے روز مقابلے میں مار دیا گیا۔ اہلخانہ کے مطابق ایمبولینس کے ڈرائیور نے زخمی جنید کی تصویر بنائی اور سائٹ سپرہائی وے تھانے کے ڈیوٹی افسر سے علاج کا لیٹر مانگالیکن کچھ دیر میں فائرنگ ہوئی اور پولیس اہلکار نے کہا کہ وہ جنید کی لاش لے جائے۔ عدالتی حکم پر آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے مبینہ پولیس مقابلے کی تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے ایس پی سی ٹی ڈی پرویز چانڈیو کو تحقیقاتی افسر مقرر کردیا جبکہ فریقین کو 12 فروری کو طلب کرلیا۔ واضح رہے کہ سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار اِن دنوں نقیب اللہ قتل کیس میں پولیس کو مطلوب ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: