حدیبیہ پیپرز ملز کیس:جسٹس کھوسہ کا سماعت سے انکار،بینچ ٹوٹ گیا

حدیبیہ پیپرملز ریفرنس میں جسٹس آصف سعید کھوسہ نے سماعت سے معذرت کرلی جس کے بعد کیس کی سماعت  کیلئے تشکیل دیا سپریم کورٹ کا 3رکنی بینچ ٹوٹ گیا۔ نیا بینچ تشکیل دینے کی درخواست چیف جسٹس کو بھجوادی گئی۔ جسٹس آصف کھوسہ نے کہا کہ رجسٹرار آفس نے کیس غلطی سے بینچ کے سامنے لگا دیا اور شاید رجسٹرار آفس نے پاناما کیس پر میرا فیصلہ نہیں پڑھا، اپنے فیصلے میں حدیبیہ کیس کھولنے کے حوالے سے ایک حد تک فیصلہ دے چکا ہوں،ان کاکہناتھاکہ رجسٹرار آفس کو کیس ہمارے بینچ کے سامنے نہیں لگانا چاہیے تھا۔جسٹس کھوسہ نے کہا کہ پاناما کیس میں چیئرمین نیب کو بھی بلایا گیا تھا، باقی ججزکے فیصلوں کے متعلق کچھ نہیں کہوں گا تاہم میں نے اپنے فیصلے میں حدیبیہ کیس سے متعلق 14 پیراگراف لکھے ہیں، اسحاق ڈار کی حد تک بھی فیصلہ دے چکا ہوں، پاناما کیس کے اپنے فیصلے میں اسحاق ڈار کے خلاف نیب کو کارروائی کا بھی کہا تھا۔اس موقع پر  نیب پراسیکیوٹرنے کہا کہ آئندہ ہفتے کیس سماعت کے لیے مقررکردیں،،جس پر جسٹس آصف سعیدکھوسہ نے کہا کہ نیب کو کارروائی کا کہہ چکا ہوں۔3 رکنی بینچ کےدیگرارکان میں جسٹس دوست محمد اور جسٹس مظہر عالم میاں خیل شامل تھے،کیس کی سماعت غیرمعینہ مدت تک کیلئےملتوی کردی گئی ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.