جنوبی پنجاب کےبعدموسمی انفلوئنزا لاہورکوبھی اپنی لپیٹ میں لینےلگا

لاہور: جنوبی پنجاب کےبعدموسمی انفلوئنزالاہورکوبھی اپنی لپیٹ میں لینےلگا-مقامی نجی ہسپتال میں زیرعلاج دو مریضوں میں وائرس کی تصدیق ہوگئی جبکہ 6 مشتبہ کیس بھی رپورٹ ہوئےہیں-دوسری جانبموسمی انفلوئنزا ایچ ون این ون سےممکنہ طورپرمتاثرہونےوالےافرادکےعلاج کےپیش نظرسرکاری ہسپتالوں میں آئسولیشن وارڈبھی بنادیئےگئےہیں،ذرائع کےمطابق لاہور میں 2017کےآخری مہینےسےاب تک انفلوائنزاکے 58 مشتبہ مریضوں کا انکشاف ہواہے۔  محکمہ صحت کے ذرائع کاکہناہےکہ ہسپتالوں میں زیرعلاج مریضوں کے نمونے تصدیق کے لیے اسلام آباد کی لیبارٹری نیشنل انسٹیوٹ آف ہیلتھ سائنسز میں بھجوادیئے گئے ہیں جبکہ تمام چھوٹے بڑے ہسپتالوں کو انفلوئنزا سے بچاؤ کی ادویات اور ویکسینیشن کاوافر سٹاک مہیا کردیا گیا ہے۔یادرہےکہ موسمی انفلوئنزاسےملتان میں 18افراد،،بہاولپورمیں 3اورڈیرہ غازی خان میں 2افراددم توڑچکےہیں،،،جبکہ ہسپتالوں میں وائرس کاشکارافرادکی آمد جاری ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: