انتظارقتل کیس:ہاتھ ہولا نہ رکھنےوالاسرکاری وکیل تبدیل

انتظار قتل کیس میں ملزمان پر ہولا ہاتھ نہ رکھنے والا سرکاری وکیل تبدیل کردیا گیا۔ پولیس بھی نامزد اور گرفتار ملزمان کے خلاف ابھی تک چالان پیش نہ کرسکی۔اے سی ایل سی اہلکاروں کی فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے انتظار کے مقدمے میں سندھ حکومت بھی روڑے اٹکانے لگی۔ عدالت میں کیس کی پیروی کرنے والے سرکاری وکیل عبدالرزاق گجر کا اچانک ٹرانسفر کردیا گیا۔ سرکاری وکیل عبدالرزاق گجر کو ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج 6 نمبر سے 9 نمبر میں تعینات کردیا گیا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزمان کو بااثر افسران کی پشت پناہی حاصل ہے۔ اسی لیے ملزمان کے خلاف کیس کا چالان تاحال پیش نہیں کیا جاسکا۔ عبد الرزاق گجر نے ملزمان پر ہاتھ ہولہ رکھنے سے انکار کردیا تھا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزمان کے خلاف قتل اور قتل الخطا کی سیکشن لگانے پر بھی غور کیا جارہا ہے۔انتظار کے والد پہلے ہی پولیس اور سی ٹی ڈی کی تفتیش پر خدشات ظاہر کرچکے ہیں اور انہوں نے شفاف تحقیقات نہ ہونے کی صورت میں بھوک ہڑتال کرنے کا بھی اعلان کیا ہوا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: