مشترکہ مفادات کونسل سے اسحاق ڈار کی رکنیت ختم

وزیر اعظم کی زیر صدارت ہونے والا مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس تاخیر سے شروع ہوا، اجلاس میں چاروں صوبوں اور وفاقی حکومت کے نمائندگان نے شرکت کی۔ اجلاس میں وفاقی وزیر خزانہ کی شرکت بھی ضروری تھی تاہم ان کے شریک نہ ہونے کے باعث انہیں عہدے سے ہٹاکر مشترکہ مفادات کونسل کی تشکیل نو کی گئی ہے۔ اسحاق ڈار کی جگہ وزیر داخلہ احسن اقبال کو مشترکہ مفادات کونسل کا وفاقی نمائندہ مقرر کردیا گیا ہے۔واضح رہے کہ اسحاق ڈار علالت کے باعث لندن کے مقامی اسپتال میں زیر علاج ہیں جہاں ان کا علاج جاری ہے ۔یاد رہے کہ گیارہ اگست کو وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کابینہ کے سب سے طاقتور ترین وزیر اسحاق ڈار کو اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی ) کی چیئرمین شپ سے ہٹادیا تھا جس کے بعد ان کی حیثیت ایک علامتی وزیر خزانہ کی ہو کر رہ گئی تھی۔وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے اسحاق ڈار کو ای سی سی کی سربراہی سے ہٹانے کے بعد یہ اہم ترین عہدہ بھی اپنے پاس ہی رکھ لیا ہے، اس سے قبل وزارت پٹرولیم بھی وزیر اعظم نے اپنے پاس ہی رکھی ہوئی تھی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.