جسٹس (ر)جاوید اقبال نے چیئرمین نیب کا چارج سنبھال لیا

نئے چیئرمین نیب کی تقرری 4 سال کے لیے کی گئی ہے ۔ آج نیب کے اعلیٰ عہدیدار مختلف امور پر چیئر مین نیب کو بریفنگ دیں گے جس کے بعد کل سے وہ باقاعدہ اپنا کام شروع کردیں گے ۔واضح رہے کہ قمر زمان چوہدری آئینی مدت پوری ہونے پر چیئرمین نیب کے عہدے سے ریٹائرڈ ہوگئے تھے اور ان کی ریٹائرمنٹ سے قبل وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید کے درمیان مشاورت کے بعد جسٹس (ر) جاوید اقبال کو چیئرمین نیب مقرر کیا گیا تھا۔ جسٹس (ر) جاوید اقبال ایبٹ آباد کمیشن کے سربراہ بھی رہ چکے ہیں جنہوں نے امریکی فورسز کے ایبٹ آباد میں مبینہ آپریشن کی تحقیقات کیں جس میں اسامہ بن لادن کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا گیا تھا۔خیال رہے کہ چیئرمین نیب کے لئے پاکستان پیپلز پارٹی نے جسٹس (ر) فقیر محمد کھوکھر، جسٹس (ر) جاوید اقبال اور سابق سیکریٹری الیکشن کمیشن اشتیاق احمد خان کے نام تجویز کیے تھے۔  جب کہ حکومت نے جسٹس (ر) رحمت جعفری، جسٹس (ر) چوہدری اعجاز اور ڈی جی آئی بی آفتاب سلطان کا نام دیا تھا۔ پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے شعیب سڈل، جسٹس (ر) فلک شیر اور ارباب شہزاد کے نام سامنے آئے تھے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.