غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ تھم نہ سکا لاہور کے اکثر علاقے رات بھر بجلی سے محروم رہے نیند پوری نہ ہوئی تو شہری سڑکوں پر نکل آئے،حکمرانوں کیخلاف نعرے

لاہور میں قہر کی گرمی میں تڑاکے دار لوڈشیڈنگ سے شہری بلبلا اٹھے ۔ پارہ چڑھتے ہی مختلف علاقوں میں بجلی غائب ہوگئی ، حکومتی دعوے ہوا ہو گئے ۔ شہروں میں چودہ سے سولہ گھنٹے ، دیہی علاقوں میں اٹھارہ سے بیس گھنٹے غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ نے شہریوں کی چیخیں نکلوا دیں ۔ لوگ ہائے ہائے کر اٹھے ، ہر گھر سے بجلی آ گئی ، نہیں آئی ، آئی تھی ، پھر چلی گئی کی صدائیں سننے کو مل رہی ہیں ۔ لوگ جاگ کر راتیں گزارنے پر مجبور ہوچکے ہیں ۔ غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا جن بے قابو ہوا تو شہریوں کا پارہ بھی چڑھ گیا،،کئی شہروں میں گرمی سے تنگ لوگ سڑکوں پر نکل آئے اور حکومت پر خوب غصہ نکالا ۔ بجلی کی پیداوار بڑھانے کے دعوے تو ہوئے لیکن بجلی کہاں ہے کوئی جواب نہیں مل رہا ۔ دعوے کرنے والے بھی دور دور تک نظر نہیں آ رہے ، شہری اور تاجر کہتے ہیں ابھی تو موسم گرما کا آغاز ہے مئی اور جون میں کیا بنے گا –

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.