قومی اسمبلی کے اجلاس میں وفاقی وزراء کی عدم دلچسپی،غیرحاضری پرسپیکراوراپوزیشن لیڈربرہم

 

سپیکرسردار ایاز صادق کی زیر صدارت قومی اسمبلی کا اجلاس ہوا جبکہ وفاقی وزراء کی ایوان میں عدم موجودگی پر سپیکر ایاز صادق اور اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے برہمی کا اظہار کیا ۔ سپیکر کا کہنا تھا کہ مجھے وزرا کی مرضی سے نہیں اپنی مرضی سے ایوان چلانا ہے اوراگر وزراء ایوان میں نہ آئے تو ارکان کے پیش کیے گئے بل منظور کر لیے جائیں گےاورحکومت کے خلاف ووٹ کرادوں گا۔ ایجنڈے پر موجود بل کمیٹیوں کو بھیج دیتے ہیں،وزرا نہیں آتے تو نہ آئیں۔اس پر اپوزیشن لیڈر سید خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ بل کمیٹی کو بھیجنا ایکسیلنٹ لالی پاپ ہے۔ آپ کورم پورا کرائیں اور اسمبلی چلائیں۔ ایسے اسمبلی نہیں چلے گی اگر ایسا نہ ہوا تو دیکھتا ہوں آپ کیسے اسمبلی چلاتے ہیں۔اس پر ایم کیو ایم پاکستان کے رہنماء رشید گوڈیل کا کہنا تھا کہ ایوان کی کارروائی کسی ایک شخص کی مرضی سے نہیں سب کی مرضی سے چلتی ہے، کوئی اکیلے کیسے اسمبلی کی کارروائی روک سکتا ہے ۔ اپوزیشن لیڈر کو چاہئے کہ کوئی بات کرنے سے پہلے ہم سے بھی پوچھیں۔ بعد ازاں سپیکر نے کورم پورا نہ ہونے پر قومی اسمبلی کا اجلاس ملتوی کردیا ۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.