قومی اسمبلی اجلاس شورشرابہ کی نذر گو نواز گو کے نعرے،استعفیٰ کا مطالبہ ،اپوزیشن کاواک آؤٹ ایجنڈے کی کاپیاں پھاڑ دیں،اجلاس غیر معینہ مدت تک ملتوی

اپوزیشن ارکان نے خوب شور شرابا کیا ۔ ڈپٹی سپیکر کی ڈائس کے سامنے ایجنڈے کی کاپیاں بھی پھاڑ دیں ، خورشید شاہ نے وزیر اعظم سے استعفیٰ کا مطالبہ کیا ۔ لیگی رہنما شیخ آفتاب نے جواب دیا وزیر اعظم استعفیٰ نہیں دیں گے ۔پاناما کا ہنگامہ ابھی تھما نہیں ہوا ، قومی اسمبلی میں خوب شور شرابا ہوا ۔اپوزیشن ارکان سیاہ پٹیاں باندھ کر شریک ہوئے اور گو نواز گو استعفی دو کے نعرے لگائے ۔ خورشید شاہ نے اس موقع پر کہا نواز شریف استعفیٰ دے کر پارلیمنٹ بچائیں جس پر لیگی رہنما شیخ آفتاب نے جارحانہ خطاب کیا اور اپوزیشن پر خوب برسے ۔ شیخ آفتاب کا خطاب جاری تھا تو اپوزیشن ارکان ڈپٹی سپیکر کی ڈائس کے سامنے جمع ہوگئے اور ایجنڈے کی کاپیاں پھاڑ کر خوب نعرے بازی کی ۔ ڈپٹی سپیکر اپوزیشن اراکین کو نشستوں پر بیٹھنے کا بار بار بولتے رہے لیکن کسی نے ایک نہ سنی ۔ اپوزیشن کا شور شرابا جاری رہا ، ڈپٹی سپیکر نے اجلاس بدھ تک ملتوی کر دیا –

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.