عدلیہ مخالف تقاریرکیس:نواز شریف کالاہور ہائیکورٹ بینچ کےسربراہ پراعتراض

نواز شریف اور مریم نواز سمیت 16 اراکین اسمبلی کے خلاف عدلیہ مخالف تقاریر کیس کی سماعت کرنےوالےلاہورہائیکورٹ بینچ کےچوتھی بارٹوٹنےکاامکان پیداہوگیا، سابق وزیراعظم نےاپنےوکیل کےذریعےدائرکردہ متفرق درخواست میں بینچ کےسربراہ جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی پرتحریری صورت میں اعتراضات اٹھادیئے، درخواستگزارکے وکیل اے ڈوگر نے موقف اختیارکیا کہ جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے میرےموکل  کے وکیل کو سنے بغیر اپنے حکم نامے میں متنازعہ ریمارکس لکھے، فاضل جج کے ریمارکس سے میرے موکل کے دل میں خوف پیدا ہوا، بینچ میں جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی کی موجودگی سے انصاف کا حصول ممکن نظر نہیں آتا۔ اس لئےاستدعا ہے کہ جسٹس مظاہر خود کو بینچ سے علیحدہ کرلیں۔ عدلیہ مخالف تقاریر کیس کی سماعت کرنےوالےبینچ کےدیگراراکین میں جسٹس مسعود جہانگیر اور جسٹس عاطر محمود شامل ہیں۔اس سےپہلےبھی مختلف وجوہات کی بناپرتین باربینچ تحلیل ہوچکاہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: