پاناما فیصلہ:سپریم کورٹ نے پانچ رکنی بینچ بنانے کی درخواست منظور کرلی

سپریم کورٹ میں پاناما کیس کے فیصلے پر نظرثانی کیلئے شریف فیملی کی جانب سے دائر کی گئی درخواستوں پر سماعت شروع ہوئی، جسٹس اعجاز افضل خان کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی۔ سماعت کے آغاز پر نوازشریف کے بچوں کے وکیل سلمان اکرم راجہ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پانچ رکنی فیصلے کیخلاف نظر ثانی درخواست پہلے سنی جائے کیونکہ پاناما کیس میں بھی تین رکنی بنچ کا فیصلہ پانچ رکنی بینچ میں ضم ہوگیا تھا۔ جس پر جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس دیئے کہ فرض کریں نظرثانی درخواستوں کیلئے پانچ رکنی بنچ بن جائے مگر فیصلہ تین رکنی بینچ کا ہے۔ جس پر وکیل سلمان اکرم راجہ نے دلائل دیتے ہویتے ہوئے کہا کہ پانچ رکنی بینچ کے دوبارہ اکٹھا ہونے پر بھی سوال ہے کہ کیا 5رکنی بنچ دوبارہ اکٹھا ہو سکتا تھا؟ عدالت نے 5رکنی بنچ کی تشکیل کیلئے درخواست منظور کرتے ہوئے سماعت کل تک ملتوی کر دی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.