پاناماکیس،موجودہ بنچ جے آئی ٹی تشکیل دے کرختم ہوجائے گا نئی سماعت کیلئے چیف جسٹس نیا بنچ تشکیل دیں گے اختلافی نوٹ دینے والے ججز شامل نہیں ہوں گے

جسٹس ریٹائرڈ زاہد حسین بخاری کہتے ہیں ساٹھ روز میں فیصلہ آنے کی توقع نہیں ۔ پاناما کا ہنگامہ رکا نہیں ابھی جاری ہے ، پاناما کیس کی جے آئی ٹی سپریم کورٹ کا موجودہ بینچ ہی تشکیل دے گا جبکہ جے آئی ٹی کی تشکیل کے بعد پانچ رکنی بینچ ختم ہو جائے گا ۔ کیس کی دوسری سماعت کیلئے چیف جسٹس سپریم کورٹ نیا بینچ تشکیل دیں گے ۔ فیصلے میں اختلافی نوٹ دینے والےججز نئے بینچ میں شامل نہیں ہوں گے ۔ جے آئی ٹی پاناما کیس پر اپنی پہلی تحقیقاتی رپورٹ نئے بینچ کو پیش کرے گی ۔ جسٹس ریٹائرڈ زاہد حسین بخاری نے دنیا نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے اس حوالے سے بتایا سپریم کورٹ کا نیا بینچ دو ارکان پر مشتمل ہوگا ۔ ساٹھ روز میں فیصلہ آنے کی توقع نہیں ۔ یاد رہے پاناما کیس کے فیصلے میں جسٹس آصف سعید کھوسہ اور جسٹس گلزار احمد نے اختلافی نوٹ لکھے جبکہ جسٹس عظمت سعید ، جسٹس اعجاز افضل اور جسٹس اعجاز الاحسن نے تحقیقات کا حکم دیا –

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.