پی ٹی وی، پارلیمنٹ حملہ کیس: پی ٹی آئی رہنماﺅں کی عبوری ضمانت منظور

پی ٹی وی: انسداد دہشتگردی عدالت میں پی ٹی وی ،پارلیمنٹ حملہ کیس کی سماعت ہوئی،اے ٹی سی کے جج شاہ رخ ارجمند نے مقدمات کی سماعت کی۔تحریک انصاف کے رہنماشاہ محمودقریشی،شیریں مزاری،اسد عمر ،شفقت محمودسمیت دیگر عدالت میں پیش ہوئے۔پولیس نے عدالت کو بتایا کہ شیریں مزاری بھی سرکاری عمارتوں پرحملے میں ملوث تھیں جس کے الزام میں رکن قومی اسمبلی کوبھی گرفتارکرناہے۔ پراسیکیوٹر نے کہا کہ پی ٹی آئی رہنمااپنے ساتھ مسلح لوگوں کولائےاس لئے دھرنے میں ہلاکتوں کی ذمہ داری پی ٹی آئی قیادت پرآتی ہے جس پر تحریک انصاف کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پرامن مظاہرین کےخلاف مقدمات درج کئے گئے اورنامزدملزمان رکن قومی اسمبلی ہیں ۔انسداد دہشتگردی عدالت نےدونوں اطراف کے دلائل سننے کے بعد پی ٹی آئی رہنماﺅں کی عبوری ضمانت منظور کر لی اور شیریں مزاری کو بے قصور قرار دیتے ہوئے مقدمہ خارج کرنے کا حکم دے دیا۔بعدازاں عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پی ٹی آئی رہنماء شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ہم پرمن گھڑت الزام لگائے گئے جس کا سرکاری وکیل کے پاس کوئی ویڈیویاتصویری ثبوت نہیں،جھوٹے الزامات کوثابت کرنے کیلئے بات کابتنگڑ بنایاگیا۔

 

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: