قندیل بلوچ قتل کیس، مفتی عبدالقوی کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

ماڈل قندیل بلوچ کو گزشتہ سال 15 جولائی کی شب قتل کیا گیا جبکہ قتل میں ملوث ان کا بھائی وسیم اور کزن حق نواز جیل میں قید ہیں۔گزشتہ روز سی پی او ملتان نے تفتیشی افسر نور اکبر کو 15 ماہ گزرنے کے باوجود حتمی چالان پیش نہ ہونے پر معطل کردیا تھا اور ان کی تنخواہ قرقی کرنے کا بھی حکم دیا تھا۔ اہم تفتیشی افسر نور اکبر نے جوڈیشل مجسٹریٹ کو بتایا کہ کیس میں نامزد ملزم مفتی عبدالقوی پولیس سے تعاون نہیں کررہے ہیں، انہیں جب بیان دینے کا کہا جاتا ہے وہ حاضر نہیں ہوتے۔ جوڈیشل مجسٹریٹ نے تفتیشی افسر کی استدعا پر مفتی عبدالقوی کے ناقابل ضمانت وارنٹ جاری کردیئےاور ان کی فوری گرفتاری کا حکم دیدیا۔ دوسری جانب مفتی عبدالقوی کا کہنا ہےکہ وہ ضمانت قبل از گرفتاری کراچکے ہیں جب کہ وہ پولیس سے ہر قسم کے تعاون کے لیے تیار ہیں، پولیس جب چاہے ان کے دارالعلوم میں آکر بیان لے سکتی ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.