راولپنڈی سے شروع ہونے والی ریلی کااختتام جہلم میں ہوا

گیارہ بجکر پانچ منٹ پرریلی کی روانگی سے قبل مرکزی قائدین نےپنجاب ہاؤس آمد شروع کردی، اس موقع پر سیکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کئے گئے ہیں ، پنجاب پولیس نے ریلی کی روانگی سے قبل پنجاب ہاؤس کے اطراف اسنیپ چیکنگ کی۔ اس موقع پر زعیم قادری کا کہنا تھا کہ عوام اپنے اپنے شہروں میں اپنے محبوب قائد کی جھلک دیکھنے کیلئے بیتاب ہیں، کوشش ہے کہ اس موسم میں پاکستانی عوام کو تکلیف نہ دی جائے بلکہ جلد از جلد سفر کا اختتام کیا جائے۔

گیارہ بجکر پچاس منٹ پرپنجاب ہاؤس پرمیڈیا سےغیر رسمی بات چیت کرتے ہوئے سینیٹر آصف کرمانی کا کہنا تھا کاعوام کی عدالت نے نواز شریف کو تمام الزامات سے باعزت بری کردیا ہے

بارہ بجکر دس منٹپر نواز شریف کی زیر صدارت (ن) لیگ کا مشاورتی اجلاس ہوا، اجلاس میں وزیر داخلہ،وزیر اعظم آزاد کشمیر ،خواجہ سعد رفیق،پرویز رشید، عباس آفریدی، امیر مقام سمیت،عابد شیر ، علی،پیر صابر شاہ ،ماوری میمن اور طارق فضل چوہدری نے شرکت کی ، مشاورتی اجلاس میں وزیر داخلہ احسن اقبال نے سیکیورٹی انتظامات سے متعلق نوازشریف کو آگاہ کیا۔

دوسری جانب موٹر وے پولیس نے بھی ٹریفک پلان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ریلی کے باعث ٹریفک سواں اڈا راولپنڈی سے جہلم تک معمول سے بہت زیادہ ہوگا، راولپنڈی سے جہلم کےدرمیان جی ٹی روڑ پر مختلف جگہوں پر ٹریفک کو ڈائیورٹ کیا جائےگا۔

بارہ بجکر چالیس منٹ پرنواز شریف کی ریلی راولپنڈی سے اپنی اگلی منزل کی جانب روانہ ہوئی اس موقع پر کارکنان کی جانب سے قائدین کے حق میں شدید نعرے بازی کی گئی۔

ایک بجکردس منٹ پراین اے56 سےایک بڑی ریلی کچہری چوک پہنچی، ریلی کی قیادت لیگی رہنماچوہدری تنویر کے بھتیجےچوہدری افضل نےکی ،  جس میں کارکنان  کی بڑی تعداد ریلی میں شریک ہوئی جنہوں نے نواز شریف کی تصاویر اور بینرز اٹھارکھے تھے۔

ایک بجکر پچیس منٹ پرنوازشریف کی ریلی میں موجود خاتون لیگی کارکن گرمی کی شدت کے باعث بے ہوش ہوگئی ، جسے قافلے میں موجود ریسکیو 1122 کے عملے نے فوری طور پر طبی امداد دی۔

دوسری جانب پنجاب پولیس نے نواز شریف کی سیکیورٹی کے لئے ملتان سے 300 پولیس اہلکاروں کو طلب کیا۔

دو بجکر پندرہ منٹ پرسابق وزیراعظم کی گاڑی  نےایک سو تین کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے سفر کیا، نواز شریف اپنی گاڑی میں سوار تھے جبکہ ان کے لئے بنایا گیا گرین کنٹینر قافلے کے ساتھ پیچھے رہ گیا

تین بجکر بیس منٹ پرسوہاوہ پہنچنے پر لیگی کارکنان کی جانب سے قائد نواز شریف کا شاندار استقبال کیا گیا، کارکنان نے سابق وزیراعظم کو دیکھتے ہی ان کی گاڑی کو روک لیا اور ان کے حق میں شدید نعرے بازی کی

تین بجکر پچاس منٹپرسابق وزیراعظم دینہ پہنچ گئے،جہاں کارکنان کی جانب سے نواز شریف کے قافلے پر شاندار گل پاشی کی گئی،اس موقع پر کارکنان کی جانب سے آتش بازی کا شاندار مظاہرہ بھی کیا گیا،

تین بجکر پچپن منٹ پرسوہاوہ پہنچنے پر سابق وزیراعظم نے کارکنان کے اصرار پر مختصر خطاب کیا ،

خطاب کے بعد قافلہ رواں دواں ہوا اور جہلم پہنچا جہاں نواز شریف کے پوسٹروں کی بہار تھی، لیگی قیادت کے استقبال کیلئے بینرز اور بڑے بڑے سائن بورڈ لگائیں  گئے  تھے  نوازشریف کے قافلے نے جہلم قیام کیا ہے ۔ مشن جی ٹی روڈ کے تیسرے روز کا آغاز جمعہ کی صبح دس بجے جہلم پل سے  کیا جائے گا

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.