شریف فیملی کے خلاف نیب کے ریفرنسز میں غلطیوں کا انکشاف

عدالتی عملے نے ہفتے اور اتوار کو بھی ریفرنسسز کی سکروٹینی کا عمل جاری رکھا جس میں غلطیاں سامنے آئیں۔ بہت سے صفحات دو مرتبہ ریفرنسز کا حصہ بنائے گئے ہیں۔ احتساب عدالت کے جج نے رجسٹرار کو ہدایت کی ہے کہ چاروں ریفرنسز 14 ستمبر تک عدالت کے روبرو پیش کیے جائیں۔ آفشور کمپنیوں سے متعلق ریفرنس اور اسحاق ڈار کے اثاثہ جات ریفرنس کی سکروٹنی بھی جاری ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.