سندھ حکومت اور گورنر میں تناؤ، اسمبلی سے پاس بلوں کی توثیق سے انکار

سندھ میں نیب قوانین کی منسوخی سے متعلق بل کی منظوری کا معاملہ لٹک گیاہے۔ گورنرسندھ محمد زبیر نے بل کو عوامی مفاد کے خلاف قراردیتےہوئےاس پردستخط کرنے سے انکار کردیا ہے۔

گورنر نے سندھ اسمبلی کےمنظورکردہ نیب قوانین کی منسوخی کے بل پردستخط کئےبغیروزیراعلی سندھ کو واپس بھیجوا دیا ہے، گورنر سندھ محمد زبیرکا موقف تھا کہ صوبائی اسمبلی سےمنظور کردہ بل عوام کی خواہشات کےمطابق نہیں ہے گورنر سندھ کا کہنا ہے کہ وفاقی قوانین کوغیرموثر کرنے کا صوبائی اسمبلی کو اختیار نہیں ہے۔ سندھ اسمبلی کو بھیجےگئے اپنے پیغام میں گورنر سندھ نے مطالبہ کیا کہ منظورکردہ بل وفاقی قوانین سے متصادم ہے، سندھ اسمبلی اس کا دوبارہ جائزہ لے۔

وزیر قانون سندھ ضیاالحسن لنجار کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت نیب قوانین کی منسوخی کا بل اور گورنر کا پیغام اسمبلی میں پیش کرے گی، گورنر کے پیغام اور بل کا فیصلہ ایوان نے کرنا ہے۔ دوسری جانب گورنر سندھ نے نجی بجلی گھروں کو سبسڈی دینے سے متعلق بل 2017 بھی عوامی مفاد کے خلاف قرار دیتے ہوئے دستخط کئے بغیر اسمبلی کو واپس بھیج دیا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.