سپریم کورٹ نے زینب قتل ازخود نوٹس کیس نمٹا دیا

 جسٹس ثاقب نثار نے اپنےریمارکس میں مزید کہا کہ زینب قتل کیس میں ملزم عمران کو پکڑنے پر آئی جی پنجاب پولیس کیپٹن ریٹائرڈ عارف نواز خان کے شکر گزار ہیں ۔ واضح رہے کہ پنجاب کے ضلع قصور سے اغواء کی جانے والی 7 سالہ بچی زینب کو زیادتی کے بعد قتل کیا گیا تھا جس کی لاش 9 جنوری کو ایک کچرے کے ڈھیرسے برآمد ہوئی تھی۔ چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے اس واقعے کا از خود نوٹس لیتے ہوئے 21 جنوری کو سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں کیس کی سماعت کی اور متعلقہ پولیس کی جانب سے کی جانے والی پولیس تفتیش پر عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کیس کی تحقیقات کے لیے تفتیشی اداروں کو 72 گھنٹوں کی مہلت دی۔ اس کے بعد 23 جنوری کو پولیس نے زینب سمیت 8 بچیوں سے زیادتی اور قتل میں ملوث ملزم عمران کی گرفتاری کا دعویٰ کیا۔ ملزم عمران پولیس کی تحویل میں ہے اور اس کے خلاف ٹرائل جیل میں کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

 

شاید آپ یہ بھی پسند کریںمصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: