پاکستان میں پانی کابحران آہستہ آہستہ اپنےپنجےگاڑنے لگا

پاکستان: پاکستان میں زیرزمین پانی میں تیزی کےساتھ کمی آرہی ہےاورمستقبل میں پاکستان کوپانی کی شدید قلت کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے،ماہرین کےمطابق پانی میں کمی  کی بڑی وجوہات میں بارشوں اورڈیمزکانہ ہوناہے ،ایک رپورٹ کےمطابق پاکستان دنیا کے ان 180 ممالک کی فہرست میں 36 ویں نمبر پر ہے جہاں پانی کی کمی کی وجہ سے حکومت، معیشت اور عوام تینوں شدید دباؤ میں ہیں ۔پاکستان میں 60سال پہلے فی فرد 50 لاکھ لٹر پانی دستیاب تھا، پانچ گنا کمی کے بعد آج یہ مقدار 10 لاکھ لٹر سےبھی کم رہ گئی ہے۔ کارخانوں فیکٹریوں کافضلہ دریاؤں اورنہروں میں ڈالنےسےپانی آلودہ ہورہاہے،اوریہی گنداپانی پینےسےشہری مہلک امراض میں مبتلاہورہے ہیں،لیکن 70سال بعدبھی حکومتی سطح پرسنجیدہ کوششیں دیکھنےمیں نہیں آئیں۔ مستقبل میں پانی کےبحران سےبچنےکیلئے حکومت اور انفرادی سطح پر ہر شخص کو کردار ادا کرنا ہوگا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: