کراچی میں پانی کی ترسیل اور تقسیم کا نظام تباہ کردیا،جسٹس(ر)امیر ہانی مسلم

کراچی : کمیشن کےسربراہ جسٹس (ر) امیر ہانی مسلم نے واٹر بورڈ کے وکیل پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بتائیں کیا ہورہا ہےکراچی میں؟کہاں گیاپانی؟ بلائیں ایم ڈی واٹر بورڈ کو، کہاں ہیں وہ ؟ اگر ایم ڈی واٹربورڈ مصروف ہیں تو دوسرے افسران کہاں ہیں؟واٹرکمیشن کی طلب کرنے پر ایم ڈی واٹربورڈ خالد شیخ کمیشن کے روبرو پیش ہوئے۔کمیشن نے ایم ڈی سے مکالمہ کیا کہ آپ اخبار پڑھتے ہیں؟آپ کوگالیاں پڑرہی ہیں،آپ جانتےہیں؟ ہائیڈرنٹ کے پڑوس میں بھی پانی نہیں مل رہا، لوگ فجر سے لائن لگالیتے ہیں مگر پانی نہیں ملتا۔ کمیشن کے سوال پر ایم ڈی نے کہا کہ شکر ادا کریں جنہیں پانی مل رہا ہے، اس پر کمیشن کے سربراہ نے کہا کہ آپ کیسی باتیں کررہے ہیں،لوگوں کو پانی دینا آپ کی ذمہ داری ہے۔ایم ڈی واٹر بورڈ نے بتایا کہ اب فون اور ایس ایم ایس سروس سےبھی ٹینکر بھجوادیتے ہیں۔واٹرکمیشن نے سوال کیا کہ گھروں کے نل میں پانی کیوں نہیں مل رہا؟ آپ نے ترسیل اور تقسیم کا نظام تباہ کردیا ہے، آپ کو گالیاں پڑ رہی ہیں ،لوگ آپ کو کوس رہے ہیں ،کچھ تو خیال کریں۔ایم ڈی خالد شیخ نے کمیشن کو بتایا کہ لوگوں کی پریشانی کااحساس ہےلیکن دیگر مسائل کے علاوہ کے الیکٹرک کی وجہ سے بھی مسئلہ کا سامنا ہے کیونکہ بجلی کم مل رہی ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: