ینگ ڈاکٹرز کی ہڑتال کا12واں روز،نئے ڈاکٹرز کی بھرتی سے صورتحال بہتر ہونے لگی

پنجاب حکومت اور ینگ ڈاکٹرز کے درمیان گزشتہ روز مذاکرات ناکام ہونے کےبعد ڈاکٹرز کی ہڑتال12 ویں روز بھی جاری ہے۔ پنجاب حکومت اب تک 80 سے زائد ہڑتالی ڈاکٹروں کو ملازمت سے برطرف کرچکی ہے اور نئے ڈاکٹرز کی بھرتی کا عمل بھی جاری ہے۔ پنجاب حکومت کے نمائندوں اور ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے درمیان مذاکرات بھی ہوئے جس کے بعد ینگ ڈاکٹرز نے ہڑتال جاری رکھنے کا اعلان کیا۔ انڈکشن پالیسی اور سیکریٹری ہیلتھ کی برطرفی کا مطالبہ لیے لاہور سمیت پنجاب کے دیگر شہروں میں ینگ ڈاکٹرز کی ہڑتال کے باعث دور دراز سے آئے مریض شدید پریشانی کا شکار ہیں۔ لاہور کے سول اور جناح ہسپتال سمیت ملتان کے نشتر ہسپتال، انسٹی ٹیویٹ آف کارڈیالوجی، سول ہسپتال، چلڈرن کمپلیکس، شہباز شریف ہسپتال اور دیگر سرکاری ہسپتالوں میں ہڑتال جاری ہے جس کی وجہ سے او پی ڈی میں مریضوں کو طبی سہولیات کی فراہمی معطل ہے۔ فیصل آباد، گوجرانوالہ، رحیم یار خان اور گجرات سمیت دیگر شہروں میں بھی ہڑتال کے باعث ینگ ڈاکٹرز صرف ایمرجنسی سروسز میں اپنی ڈیوٹیز دے رہے ہیں ۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.