برازیل کی خاتون سیاستدان کو متنازع صدرکی حمایت مہنگی پڑگئی

برازیل میں25سالہ ماریا وکٹوریہ بروس صوبہ پرانا کی رکن اسمبلی ہیں اوران کےوالد صدرمائیکل ٹیمرکی حکومت میں وزیرصحت ہیں جبکہ ان کی والدہ صوبہ پراناکی نائب گورنرہیں۔ سینکڑوں افراد اس چرچ کےباہراکٹھاہوگئےجہاں ماریاوکٹوریہ کی شادی کی تقریب جاری تھی۔ مظاہرین نےان پر انڈے پھینکےاور شدید نعرے بازی کی۔ حالات زیادہ خراب ہوئےتواس وی وی آئی پی شادی کی سیکیورٹی کیلئےپولیس کی بھاری نفری پہنچ گئی اور حالات کو قابو میں کیا جبکہ ماریا وکٹوریہ بروس کو بکتر بند گاڑی میں رخصت ہونا پڑا۔
ماریا وکٹوریہ بروس نےالزام لگایاکہ یہ مظاہرےان کی والدہ کے گورنر کےلیےانتخاب میں اترنےکےفیصلےسےمنسلک تھا اوراس کوبائیں بازو کی جماعتوں اور یونینز کا مالی تعاون حاصل تھا۔ انہوں نےبعض مہمانوں پرہونےوالے حملے پر افسوس کرتے ہوئے کہا کہ یہ جمہوریت کی قیمت ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.