وزیراعلیٰ اتر پردیش مسلم دشمنی میں اندھا ہوگیا،تاج محل کے بعد نیا شوشہ

جب سے مودی سرکار آئی ہے تب سے بھارت میں رواداری کی جگہ  مذہبی انتہا پسندی نے لے لی ہے جبکہ حکومتی سطح پر بھی اس عمل کو ہوا دی جارہی ہے اورمسلمانوں کےمذہبی جذبات مجروح کئےجارہے ہیں جس کی تازہ مثال اتر پردیش کے وزیراعلیٰ کی جانب سے بابری مسجد کے قریب اپنے دیوتا کا100میٹر اونچا مجسمہ بنانے کا اعلان ہے.بھارتی میڈیا کے مطابق یوگی ادیتہ نے مجسمہ بنانے کا منصوبہ ریاستی گورنر کے ہاں جمع کرا دیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ایودھیا میں بابری مسجد کے قریب مجوزہ رام مندر کی جگہ پرمجسمے کا سنگ بنیاد اٹھارہ اکتوبر کو ہولی کے موقع پر رکھا جائے گا۔ یوگی نے اپنے دستاویزات میں گورنر کو100 میٹر اونچا مجسمہ بابری مسجد کے قریب ساریوندی کنارے تمعیر کرنے کی تجویز دی ہے۔اس سے پہلے یوگی ادیتہ مسلم دشمنی میں تاج محل کا نام سیاحتی مقامات کی فہرست سے نکال چکے ہیں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.