ایران اور عراق میں خوفناک زلزلےسے450سےزائدافراد ہلاک،6000سے زائد زخمی

امریکی زلزلہ پیما مرکز یونائیٹڈ اسٹیٹس جیالوجیکل سروے کے مطابق ایران اور عراق کے سرحدی علاقوں میں شدید زلزلہ آیا اور لینڈ سلائیڈنگ ہوئی ۔زلزلے کی شدت 7.3 ریکارڈ کی گئی ہے۔زیادہ تر ہلاکتیں ایران میں ہی ہوئی ہیں اور اس کے 14 صوبے اور 8 دیہات متاثر ہوئے۔ سب سے زیادہ تباہی ایرانی صوبے کرمان شاہ میں ہوئی جہاں تین روزہ سوگ کا اعلان کردیا گیا ہے۔ کرمان شاہ کے شہر سرپل ذھاب میں 236 ہلاکتیں ہوئیں۔ایران میں زلزلے کے بعد 118 جھٹکے (آفٹر شاکس) محسوس کیے گئے ہیں اور مزید کا خطرہ ہے۔ زلزلے کی وجہ سے متعدد عمارتیں اور مکانات زمین بوس ہوگئے جب کہ بہت سے دیہات ہی صفحہ ہستی سے مٹ گئے۔ متاثرہ علاقوں میں امدادی کارروائیاں جاری ہیں اور ملبے تلے دبے افراد کو باہر نکالا جارہا ہے۔ متعدد زخمیوں کی حالت تشویش ناک ہے جس کی وجہ سے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔زلزلے کا مرکز عراق کے کرد علاقے سلیمانیہ میں تھا جس کی گہرائی 33 کلو میٹر تھی۔ زلزلہ اس قدر شدید نوعیت کا تھا کہ اسے عراق کے دارالحکومت بغداد اور پڑوسی ممالک میں بھی محسوس کیا گیا۔دوسری جانب پاکستان کےصدر ممنون حسین،وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور عمران خان سمیت دیگر سیاسی رہنماؤں نے زلزلہ متاثرین سے گہرے دکھ او ہمدردی کا اظہار کیا ہے جبکہ وزیراعظم نے زلزلہ متاثرین کی بھرپور مالی امداد کا بھی اعلان کیا ہے

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

%d bloggers like this: