ایرانی صدر حسن روحانی کے بھائی کو حراست میں لے لیا گیا

اس سے قبل ایرانی صدر حسن روحانی کے بھائی کا نام سرکاری انشورنس کمپنی میں مینجیرز کی زیادہ تنخواہوں کے سکینڈل میں ملوث حکام کے ساتھ بھی سامنے آیا تھا۔ وہ کسی قسم کی بدعنوانی کی تردید کرتے ہیں۔ یہ سکینڈل ایک سال سے زائد عرصہ تک صدر حسن روحانی کے لیے دردسر بنا ہوا ہے۔ عدلیہ کے ترجمان غلام حسین محسنی اژہای کا کہنا ہے کہ حسین فریدون کے حوالے سے کئی تحقیقات ہوئیں ہیں، دیگر افراد کے ساتھ بھی تفتیش کی جارہی ہے، جن میں سے کچھ اب جیل میں ہیں۔‘ ان کا مزید کہنا تھا کہ ان کی ضمانت جاری کی گئی لیکن وہ ’ضمانتی رقم جمع کروانے  میں ناکام رہے ہیں اس لیے انھیں جیل بھیج دیا گیا ہے۔‘ تاہم یہ واضح نہیں کیا گیا کہ حسین فریدون کو کن الزامات کی بنیاد پر گرفتار کیا گیا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.